خواتین کی اقتصادی خود مختاری سے غربت کی شرح میں واضح کمی آئے گی: شاہ فرمان

خیبر پختونخوا کے وزیر اطلاعات و تعلقات عامہ اور آبنوشی شاہ فرمان نے معاشرے میں خواتین کے کردار کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ خواتین کو اقتصادی طور پر خود مختار کرنا وقت کی ضرورت ہے اس سے نہ صرف انکی زندگی میں خوشحالی آئے گی بلکہ غربت کی شرح میں بھی واضح کمی آئی گی۔ یہ بات انہوں نے ہفتہ کے روز گور گھٹری پشاور میں دو روزہ فیملی تفریحی میلہ کی افتتاحی تقریب سے بحثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا، دو روزہ تفریحی میلہ کا انعقاد وویمن پارلیمنٹری کاکس اور محکمہ سماجی بہبود و ترقی نسواں کے مشترکہ تعاون سے کیا گیا ہے جو آج اتوار کے روز بھی جاری رہے گا، تفریحی میلہ میں خواتین کی گھریلو سطح پر تیار کردہ مختلف مصنوعات کے اسٹالز لگائے گئے ہیں، میلہ کا انعقاد صوبائی حکومت کے خواتین کے حقوق سے متعلق 16 روزہ آگاہی مہم کا حصہ ہے۔ تقریب میں ڈپٹی اسپیکر صوبائی اسمبلی ڈاکٹر مہر تاج روغانی، ارکان صوبائی اسمبلی عائشہ نعیم، فوزیہ بی بی کے علاوہ بڑی تعداد میں خواتین اور بچوں نے شرکت کی، تقریب سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ صوبائی حکومت صوبہ کے کلچر کے مطابق خواتین کو خودمختار بنانے کے لئے متعدد اقدامات اٹھا رہی ہے، یہ واحد خیبر پختونخوا حکومت ہے جس نے یونیورسٹیوں میں کسی بھی ڈگری پروگرام میں داخلہ لینے کیلئے خواتین کیلئے عمر کی حد مکمل ختم کر دی ہے جس کا بنیادی مقصد معاشرے کو ایک پڑھی لکھی عورت ماں، بہن اور بیٹی کی شکل میں دینا ہے جبکہ اس کے علاوہ خواتین کو اقتصادی طور پر خود مختار بنانے کیلئے سرکاری ملازمتوں میں خواتین کا کوٹہ پر عملدرآمد یقینی بنانے کے ساتھ ساتھ انکو ہنر مند بنانے کے لئے بھی اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں کیونکہ ہنر مند اور پڑھی لکھی خواتین کو مواقع فراہم کرنا صوبائی حکومت کی زمہ داریوں میں شامل ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ خواتین قانون ساز اسمبلی میں ریزروڈ سیٹ کےعلاوہ انتخابات لڑ کر بھی اپنی تعداد بڑھا سکتی ہیں۔ خیبر پختونخوا کی خواتین قابلیت کے لحاظ سے ملک کی دیگر خواتین کے مقابلے میں کم نہیں ہیں، صوبائی حکومت یہاں کی خواتین کی قابلیت کو استعمال میں لانے کے ساتھ ساتھ انہیں ایک محفوظ ماحول فراہم کرنے کیلئے بھی سنجیدہ اقدامات اٹھا رہی ہے جس کا مقصد خواتین کو مضبوط ،با اختیار،با وقار اور مفید شہری بنانا ہے اور اس ضمن میں صوبائی حکومت کے اقدامات ہماری نیتی اور پختہ عزم کا واضح ثبوت ہیں۔انہوں نے خواتین کی حقوق سے متعلق وویمن پارلیمنٹری کاکس کے ارکان عائشہ نعیم اور فوزیہ بی بی کے کردار کو سراہتے ہوئے کہا کہ وویمن پارلیمنٹری کاکس خواتین کو معاشرے کا ایک مفید شہری بنانے میں قابل قدر کام کر رہا ہے اور اس حوالے سے صوبائی حکومت کاکس کو اپنے مکمل تعاون کا یقین دلاتی ہے۔ علاوہ ازیں صوبائی وزیر اطلاعات نے خواتین کی جانب سے لگائے گئے مختلف اسٹالز کا معائنہ بھی کیا اور گھریلو سطح پر تیار کی گئی مصنوعات پر خواتین کی محنت اور ہنر کو سراہا۔