صوابی ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے تحت پلاٹس کی فراہمی کے عمل میں بد عنوانی کی انکوائری اور ذمہ داروں کا تعین کرنے کی ہدایت

وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے صوابی ڈویلپمنٹ اتھارٹی کے تحت پلاٹس کی فراہمی کے عمل میں بد عنوانی کی شفاف انکوائری کرنے اور ذمہ داروں کا تعین کرنے کی ہدایت کی ہے تاکہ زیادتی کا تدارک ہو اورکسی سے ناانصافی نہ ہو ۔ وہ وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ پشاور میں اعلیٰ سطح اجلاس کی صدارت کر رہے تھے۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ پلاٹس کی فراہمی میں میرٹ کی خلاف ورزی کی بنیاد کیا تھی کس سے کہاں کمزوری یا غلطی سرزد ہوئی ۔واضح تعین ہونا چاہیئے۔ یہ کورٹ کا فیصلہ بھی ہے۔ شفاف انکوائری مکمل کرکے عدالت کو بھیجیں تاکہ ذمہ داران کے خلاف کاروائی کی جاسکے اور ناانصافی کا تدار ک ممکن ہو سکے۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ اتھارٹی کے تحت جاری کاموں کو نہ روکیں ۔ کام رک جائے تو عوام کو نقصان ہوتا ہے البتہ غلطیوں اور کمزوریوں کی نشاندہی کریں ۔شفافیت کو برقرار رکھنے کیلئے نگرانی ضروری ہے۔انکوائری اپنی جگہ ہونی چاہیئے لیکن اُس کے ساتھ لوگوں کے مسائل حل کرنا بھی ضروری ہے۔وزیراعلیٰ نے سکولوں ، کالجوں ، ہسپتالوں ، اری گیشن اور مساجد میں شمسی توانائی کے نظام کو دیر پا اور معیاری بنانے کی بھی ہدایت کی ۔انہوں نے ہدایت کی کہ تمام سیکرٹریز کو نوٹ لکھیں کہ متعلقہ سائٹس کا دورہ کریں کہیں اگر کمزوری ہوتو اُس کا تدارک کریں۔شمسی سسٹم کا معیار چیک کریں کیونکہ اس کی عمر 30 سال ہو تی ہے۔اگر 10 سال پرانا سسٹم لیں گے تو اس کا مطلب ہے کہ اُس کی عمر 20 سال باقی ہے۔اسلئے نئے سولر پینل کی تنصیب یقینی بنائی جائے تاکہ وسائل کا ضیاع نہ ہو۔

Tags: