وزیراعلیٰ پرویز خٹک کا سابقہ ایم پی اے جمشید خان اور اس کے خاندان اور ساتھیوں کی تحریک انصاف میں شمولیت کا خیر مقدم

وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک نے سابقہ ایم پی اے جمشید خان اور اس کے خاندان اور ساتھیوں کی تحریک انصاف میں شمولیت کا خیر مقدم کیا ہے اور اس فیصلے کو تحریک انصاف کی والہانہ قیادت اور صوبائی حکومت کی عوام دوست پالیسیوں پر اعتماد کا مظہر قرار دیا ہے۔انہوں نے کہاکہ تحریک انصاف پاکستان میں غریب عوام کی واحد نمائندہ سیاسی جماعت ہے جس نے سیاسی تاریخ میں پہلی بار غریب پر سیاسی جبر و استدا دکے خلاف آواز بلند کی اور سیاسی بادشاہت پر مبنی ظالم نظام کو چیلنج کیا۔تحریک انصاف اور روایتی سیاسی وں میں فرق نمایاں ہے۔تحریک انصاف نے نہ صرف عوام کو نظام کی تبدیلی کا شعور دیا بلکہ صوبے میں اپنے تبدیلی کے منشور کا عملی مظاہرہ بھی کرکے دکھایا۔ تحریک انصاف 2018 کے عام انتخابات میں نہ صرف ضلع بونیر بلکہ صوبہ بھر اور پورے ملک میں شاندار کامیابی حاصل کرے گی ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے سواڑی ضلع بونیر میں عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔چیئرمین پاکستان تحریک انصاف عمران خان ، سپیکر صوبائی اسمبلی اسد قیصر اور ممبر قومی اسمبلی مراد سعید نے بھی اجتماع سے خطاب کیاجبکہ صوبائی وزیر محمود خان سمیت اراکین قومی و صوبائی اسمبلی، تحریک انصاف کے مقامی رہنماؤں ، منتخب عوامی نمائندوں اور عمائدین نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔پارٹی قائدین نے موصوف کی شمولیت کا خیر مقدم کیااور اُن کے فیصلے کو تحریک انصاف کی قیادت پر بھر پور اعتماد کا مظہر قرار دیا ۔ا س موقع پر سابق ایم پی اے حاجی جمشید خان پورے خاندان اور ساتھیوں سمیت اپنی پارٹیوں سے مستعفی ہو کر پی ٹی آئی میں شامل ہو گئے وزیر اعلی نے کہا کہ کرپشن کے خلاف عمران خان نے جو جہاد شروع کیاہے اسکے نتیجے میں کرپٹ وزیر اعظم نواز شریف کو کرسی سے ہٹادیا گیا ۔انہوں نے کہا کہ سی پیک منصوبوں میں بونیر میں اکنامک زون قائم کیا جائے گا سوات ایکسپریس وے کو بونیر کے ساتھ لنک کیا جائے گا ۔پی ٹی آئی کی صوبائی حکومت نے پہلی مرتبہ اداروں سے سیاست کا خاتمہ کرکے اس میں میرٹ کی بالادستی کو یقینی بنائی ہے ۔وزیراعلیٰ نے کہا کہ تحریک انصاف نے ملک میں پہلی مرتبہ بطور سیاسی نظام کی تبدیلی کا نعرہ لگایا اور اس مقصد کیلئے ایک تاریخی جدوجہد کا آغاز کیاجس نے نظام دشمن سیاستدانوں کے لئے ایک غیر یقینی صورتحال پیدا کی اور طاقتور قبضہ مافیا کو احتساب کیلئے پیش ہونا پڑا۔عوامی وسائل کی لوٹ مار ، دروغ گوئی اور دھوکہ دہی کی وجہ سے سابق وزیراعظم نواز شریف کانااہل ہونا شفاف اور خوشحال پاکستان کی طرف ایک عملی قدم اور ہماری شبانہ روز جدوجہد کا نتیجہ ہے۔وزیراعلیٰ نے کہاکہ دیگر سیاسی وں اور تحریک انصاف میں یہی بنیادی فرق ہے کہ پاکستان کی سیاست میں یکے بعد دیگرے لوٹ مار کا سلسلہ جاری تھا۔اس سیاسی لوٹ مار کے خلاف کسی کو کھڑا ہونے کی جرات نہیں تھی ۔تحریک انصاف نے اس نظام کو بدلنے اور عوام کوانصاف اور حق دلانے کیلئے آواز اُٹھائی۔صوبائی حکومت نے اپنے منشور کے مطابق غریب عوام کو خدمات کی فراہمی کا بہترین نظام ، معیاری تعلیم اور علاج معالجہ کی معیاری سہولیات دینے کیلئے چار سال بھر پور کوشش کی ۔چار سالہ جدوجہد میں صوبائی حکومت کی تمام تر اصلاحات اور اقدامات کا مرکز و محورغریب عوام رہے ۔عوام کی فلاح و ترقی اور نظام کی تبدیلی کیلئے ہمارے اقداما ت کا ثمر ہے کہ آج دیگر سیاسی وں کے رہنما اور زندگی کے ہر طبقے سے با شعور لوگ تحریک انصاف کے نظام کی تبدیلی کے کارواں کا حصہ بنتے جارہے ہیں۔2018 کے عام انتخابات ثابت کریں گے کہ تحریک انصاف ہی اس ملک کے نوجوانوں اور غریب کی واحد نمائندہ ہے۔ترقیاتی حکمت عملی کا ذکر کرتے ہوئے پرویز خٹک نے کہاکہ وہ کھوکھلے وعدوں پر یقین نہیں رکھتے ۔جو کام عوام کے مفاد میں ضروری ہواس کے لئے وسائل فراہم کرنا اور اُس کی شفاف تکمیل اپنی ذمہ داری سمجھتے ہیں۔انہوں نے اعلان کیا کہ سوات موٹروے کی تعمیر کے اگلے مرحلے میں ضلع بونیر کو موٹروے سے منسلک کیا جائے گا۔ قبل ازیں عمران خان اور وزیراعلیٰ پرویز خٹک نے یونیورسٹی آف بونیراور پلے گراؤنڈ ڈگری کالج سواڑی کا افتتاح کیا۔وہ ممبر قومی اسمبلی شیر اکبر خان کے گھر بھی گئے جہاں اُنہوں نے شیر اکبر خان کی والدہ کی وفات پر اُن سے تعزیت کا اظہار کیا۔

Tags: