Directorate of Information and Public Relations, Khyber Pakhtunkhwa

The Official gateway to Governmental Services of the Govt. of Khyber Pakhtunkhwa

چیف منسٹر کمپلینٹ اینڈ ریڈرسل سیل کی جانب سے عوامی شکایات کے ازالے کے لئے کارروائیاں

عوامی شکایات کے ازالے کے لئے قائم کردہ چیف منسٹر کمپلینٹ اینڈ ریڈرسل سیل نے کئی عوامی شکایات پر کام مکمل کر لیا ہے اور شکایات کے ازالے کیساتھ ذمہ دار اہلکارو ں کے خلاف کارروائیاں بھی شروع کر دی گئی ہیں۔چیف منسٹر کمپلینٹ اینڈریڈرسل سیل سے موصول شدہ تفصیلات کے مطابق مرسلین ولد ایم رسول نے پی ایس ٹی نورالامین شاہ کے خلاف رپورٹ درج کرائی جس پر انکوائری کا عمل کامیابی سے مکمل کرنے کے بعدنورالامین پی ایس ٹی کو معطل کر کے اشتہاری مجرم قرار دے دیا گیا۔اسی طرح دو ملازمتوں کی تنخواہ لینے پر بنیادی مرکز صحت بدانہ کی لیڈی ہیلتھ ورکرحسینہ بی بی کے خلاف ڈاکٹر محمد اعظم کی شکایت پر کمپلینٹ سیل نے ڈپٹی کمشنر سوات کے ذریعے تحقیقات کروائیں اور الزام ثابت ہونے پر مسماۃ بی بی حسینہ کو ٹائم سکیل فارمولے کے تحت ترقی روکنے کی بڑی سزا دی گئی ہے۔ایک اور شکایت فیزIVحیات آباد میں کوڑے کے ڈھیر کو ہٹانے سے متعلق شاہ فہد نے کی تھی جو چیف ایگزیکٹیو واٹر اینڈ سنیٹیشن سروسز کو ازالے کی ہدایات کے ساتھ بھیج دی گئی جس پر مذکورہ جگہ سے کوڑا کرکٹ کے ڈھیر ہٹا دیئے گئے جبکہ اوگی پولیس مانسہرہ کے خلاف شکایت کہ وہ مجرموں کو گرفتار نہیں کر رہی،کا بھی کامیابی سے ازالہ کر دیا گیا اور ملزمان کو گرفتار کر لیا گیا۔اس کے علاوہ گرداور فضل دیان تنگی چارسدہ کے خلاف ایک شکایت ڈپٹی کمشنر چارسدہ کو بھیجدی گئی جس پر انکوائری کے بعد فضل دیان کو قصور وار پایا گیا جس کو ایک سالانہ انکریمنٹ روکنے اور اگلے دو برسوں کے دوران ترقی کے لئے غیر موزوں قرار دیا گیا۔چترال میں دو نوجوانوں کے قتل پرفوری انصاف کی فراہمی سے متعلق شکایت ضروری کارروائی کے لئے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر چترال کو بھیجی گئی ضروری کارروائی کے بعد نو افراد کو گرفتار کر لیا گیا اور ان کی نشاندہی پرلاش دریا سے برآمد کر لی گئی اور تمام ملزمان کو بھی حوالات میں بند کر دیا گیا۔اسی طرح سائیڈر فوڈ انڈسٹریل اسٹیٹ حطار ہری پور اور یم فوڈز انڈسٹریل اسٹیٹ گدون امازئی صوابی کے خلاف ماذا جوس کی کلر سکیم اور آرٹ ورک غیر قانونی طور پر نقل کرنے کی شکایت ازالے کے لئے ڈپٹی کمشنر ہری پور کوبھیجی گئی مذکورہ مسئلہ متعلقہ انتظامیہ کے نوٹس میں لایا گیا جس پر انہوں نے مستقبل میں برانڈ رسانہ کی پیداوار مارکیٹ میں فروخت اور تقسیم نہ کرنے پر اتفاق کیا۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ وزیر اعلیٰ کے کمپلینٹ سیل کو مکمل طور پر فعال کر دیا گیا ہے اور لوگوں کی بڑی تعداد نے اپنی شکایات اور مسائل کے حل کیلئے اس پر اپنے بھرپور اعتماد کا اظہار کیا ہے۔
About